Course Title        :               Literary Criticism I

Course Code      :               URDU354

Credit Hours       :               03

Instructor            :               Tariq Habib

E mail                 :               tariq.habib@uos.edu.pk

Timings               :               Monday  10 am to 11:30 am

                                            Wednesday 10 am to 11:30 am

 Mid Term           :                 14-12-2020

Final Term           :                04-02-2021

ESCRIPTION AND OBJECTIVES:

اردو زبان کے باقاعدہ سفر کی عمر بھی اب پانچ سو سال کے لگ بھگ ہوچلی ہے۔ اس پانچ سو سال کے عرصے میں اردو نے کئی فکری و فنی منازل طے کیں ؛کئی اصناف کو جنم دیا اور ان کی آب یاری کی۔  بیسیوں رجحانات اپنے اندر سموے  اور متعدد لہجوں کو فروغ دیا۔ انھی رجحانات میں سے  ایک رجحان اور رویہ نقد و نظر یا پھر مروجہ الفاظ میں تنقید کا بھی ہے ۔ اس میں ہرگز ہرگز کوئی شک و شبہ نہیں کہ تنقید کا عمل ، تخلیق کے وجود میں آنے کے بعد شروع ہوتا ہے ؛ نیز تخلیق کا وجود تنقید پر مقدم ہے ۔ یہ بھی قانونِ فطرت ہے کہ ہر بڑی تخلیق ، اپنے تنقیدی اصول اپنے ساتھ لے کر آتی ہے۔ تنقید کا بنیادی مقصد کسی تخلیق، کسی فن پارے کی عظمت کو واضح کرنا، کھرے کھوٹے میں امتیازی خط کھینچنا اور ادب کے طلبہ کے لیے تخلیقات کے مطالعے کے حوالے سے لالچ  اور آسودگی پیدا کرنا ہے ۔ اس ترغیب کے بعد تنقید کے متعدد دوسرے افادی پہلو اجاگر ہوتے ہیں، جس میں سب سے بڑا پہلو ایک باذوق معاشرہ تشکیل دینا ہے۔ اردو تنقید نگاری کی روایت میں یونانی، عربی، فارسی اور انگریزی ادب سے استفادے کے عناصر شامل ہیں۔  مغربی تنقید ایک الگ اور بڑا موضوع ہے ، جس کے اہم اور اصول ساز ناقدین موجودہ میقات (پنجم) میں زیرِ بحث لاے گئے ہیں، جس کے تحت تنقید کا تعارف، تنقید کے اہم بنیادی موضوعات، تنقید کا اسلوب، تخلیق و تحقیق سے رشتہ، مغربی تنقید کےآثار، محرکات واسباب، اصول و قواعد ، رجحانات و موضوعات اور اہم ترین مغربی نقاد زیرِ بحث لاے گئے ہیں۔ ناقدین کے ان مطالعات سے بیسویں صدی میں ابھرنے والے تنقیدی دبستانوں کے ذریعے سے بحث کی گئی ہے۔یوں ان تنقیدی دبستانوں اور ناقدین کے کاموں کو سامنے رکھتے ہوے تخلیقی ادب کی اہمیت اور ضرورت کو سمجھنے میں مددملتی ہے اور مختلف اصناف و رجحانات کے ارتقائی سفر پر بھی روشنی پڑتی ہے ؛ نیز اس  تنقیدی ادب کے مطالعے سے جہاں ایک زبان و ادب کی ایک علمی روایت کی تفہیم ممکن ہوتی ہے، وہیں معاشرتی سطح پر زندگی گزارنے کے آداب سے بھی شناسائی میسر آتی ہے اورعملی سطح پر زندگی بہتر طور پر گزارنے کی سمجھ بوجھ مہیا ہوتی ہے۔  

INTENDED LEARNING OUTCOMES: 

1بیسویں صدی کے تناظر میں تنقیدکا مطالعہ اور انھیں تنقید کے مقاصد اور مطالب سے روشناس کروانا ۔

2تنقید اورتخلیق کے رشتے کے ساتھ ساتھ تنقید اور تحقیق کے رشتے سے آگاہ کرنا اور مشرقی تنقیدی دبستانوں سے آگاہ کرنا ۔

3 مغربی ناقدین کا مطالعہ اور اردو تنقید پر ان کے اثرات سے شناسائی بہم پہنچانا ۔ 

4مغربی تنقید کے تناظر میں ابھرنے والے اردو کے تنقیدی دبستانوں کا مطالعہ اور ان کے اثرات اردو کے تخلیقی ادب پر واضح کرنا ۔

5عملی سطح پر علمی و ادبی فن پاروں کو پرکھنے اور ان پرتنقید کے قابل بنانا ۔ 

COURSE CONTENTS: 

1تنقید ۔ تعارف ۔

2تنقید کا پس منظری مطالعہ اور لفظِ لٹریچر کے ساتھ تطابق ۔ 

3تنقید کا اُسلوب ۔ 

4تنقید اور تخلیق کا رشتہ ۔

5تنقید اور تحقیق کا باہمی ربط اور تعلق ۔

6یونانی علمی تناظر اور یونانی نقاد افلاطون کا تعارف، نظریات، مثالی ریاست، جمہیوریہ اور اثرات کا مطلعہ ۔ 

7افلاطون کے قابل ترین شاگرد یونانی نقاد ارسطو کا تعارف، نظریات، نظریہء نقل اور ادب پر ان کےاثرات کا مطلعہ ۔ 

8 مغربی نقاد آرنلڈ کے تنقیدی نظریات، ادب ، سماج ، ثقافت اور انتشار کا مطالعہ ۔ 

9 مغربی نقاد ٹی ایس ایلیٹ کے تصورِ روایت اور شاعری کی آوازوں کے مطالعات اور اثرات ۔ 

10 سوئیسر کے نظریہء ساختیات کا مطالعہ اور اثرات ۔ 

11 نارتھ فرائی روپ کا ہیئت اور ابہام کے تناظر میں مطالعہ ۔ 

12  لفظِ دبستان کا  تفصیلی تعارف اور اردو کے تنقیدی دبستانوں کا تعارف ۔ 

13 جمالیاتی تنقیدی دبستان ۔ 

14 ترقی پسند تنقیدی دبستان۔ 

15 نفسیاتی تنقیدی دبستان ۔ 

READINGS:

1 ادبی تنقید از: ڈاکٹر محمد حسن ۔ 

2 ہیئتی تنقید از: ڈاکٹر محمد حسن ۔ 

3 تنقیدی نظریات از: پروفیسر سید احتشام حسین ۔

4 تحلیلِ نفسی اور اردو تنقید از: پروفیسر کلیم الدین احمد ۔

5 اردو ادب کی تحریکیں، از: ڈاکٹر انور سدید ۔

6 معنی اور تناظر ، از: ڈاکٹر وزیرآغا ۔

7 اشاراتِ تنقید از: ڈاکٹر سید عبداللہ ۔

8 تنقیدی دبستان از : ڈاکٹر سلیم اختر ۔

9 تنقیدی نظریے از: ڈاکٹر ملک حسن اختر ۔

10 افلاطون سے ایلیٹ تک از: پروفیسر عابد صدیق ۔

11 ارسطو سے ایلیٹ تک از: ڈاکٹر جمیل جالبی ۔

12 مغرب کے تنقیدی اصول از: پروفیسر ڈاکٹر سجاد باقر رضوی ۔

13 مغرب کے تنقیدی نظریے (دو جلدیں) از: پروفیسر جیلانی کامران ۔۔

14 ساختیات، پس ساختیات اور مشرقی شعریات، از: ڈاکٹر گوپی چند نارنگ ۔ 

15 ساختیات ایک تعارف مرتبہ : ڈاکٹر ناصر عباس نیر۔ 

16 کشاف تنقیدی اصطلاحات از : پروفیسر ابوالاعجاز حفیظ صدیقی ۔

 

 

Week

Topics and Readings

Books with Page No.

 

1

تنقید ۔ تعارف ۔ اسلوب ۔ فکر و فن کی آمیزش۔ الفاظ کی اہمیت و پہچان

 

2

تنقید ۔ مقاصد و مطالب۔ دبستان ۔ تعارف ۔ لفظی و مرادی حیثیت

کشاف تنقیدی اصطلاحات

3

تنقید اور تخلیق کا رشتہ۔ تنقید اور تحقیق کا رشتہ

ادبی تنقید۔ اشاراتِ تنقید

4

تنقید کا اُسلوب

تنقیدی نظریے

5

افلاطون

افلاطون سے ایلیٹ تک/ مغرب کے تنقیدی اصول

6

ارسطو

ارسطو سے ایلیٹ تک / مغرب کے تنقیدی اصول

7

آرنلڈ 

مغرب کے تنقیدی اصول

 

وسطی امتحان

 

8

ٹی ایس ایلیٹ۔ تصورِروایت۔ شاعری کی آوازیں

ارسطو سے ایلیٹ تک / مغرب کے تنقیدی اصول

9

سوئیسر ۔ ساختیات 

ساختیات، پسِ ساختیات اورمشرقی شعریات

10

نارتھ فرائی ۔ ہیئت اور ابہام

معنی اور تناظر

11

اردو تنقیدی دبستان ۔ جمالیاتی دبستانِ تنقید

اردو ادب کی تحریکیں / رومانوی تحریک

12

ترقی پسند تحریک و دبستانِ تدنقید ۔ کارل مارکس کے نظریات

تنقیدی نظریات

13

 سگمنڈ فرائیڈ۔ کارل گستاو ژنگ اور نفسیاتی تنقیدی دبستان

مغرب کے تنقیدی نظریے

14

مشرقی اور مغربی تنقیدی دبستانوں کا تقابل اور حاصل مطالعہ

اعادہ

 

حتمی امتحان

 

 

RESEARCH PROJECT /PRACTICALS/LABS/ASSIGNMENTS :

1 ہر طالب علم سے تنقید اور تصورات پر دو دو عملی مشقیں ۔  

2ناقدین کے تصورات پر مذاکرہ  اور ہر طالب علم سے الگ الگ مباحثاتی نمایندگی ۔

ASSESSMENT CRITERIA :

Total                :           100

Sessional : Assignments + Presentation + Behaviour + Attendence = 5 + 5 + 5 + 5 = 20

Mid exam        :           30

Final exam      :           50